اثاثہ جات کیس،خورشید شاہ کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع کی نیب کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

سکھر (نمائندہ خصوصی)احتساب عدالت سکھر نے اثاثہ جات کیس میں فریقین کے وکلا کے دلائل سننے کے بعد خورشیدشاہ کے ریمانڈ سے متعلق فیصلہ محفوظ کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میںپیپلز پارٹی کے رہنماخورشید شاہ کے خلاف آمدن سے زائداثاثہ جات کیس کی سماعت ہوئی، نیب پراسیکوٹر نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ نیب کی جانب سے کی جانے والی تحقیقات سے عدالت کوآگاہ کیا۔ نیب پراسیکیوٹر نے موقف اختیار کیا کہ خورشید شاہ نیب سے تعاون نہیں کررہے ،خورشید شاہ کے خلاف ابھی مزید تحقیقات جاری ہیں اس لیے ملزم کے جسمانی ریمانڈ میں 15روز کا اضافہ کیا جائے۔

سابق چیئر مین سینیٹ رضا ربانی نے کیس کی پیروی کرتے ہوئے کہا کہ میراپہلے دن سے یہ کہنا ہے کہ خورشیدشاہ کوسیاسی انتقام کانشانہ بنایاجارہاہے، اسمبلی کے فنڈزریزنگ اکاو¿نٹ کی بناپرخورشیدشاہ کو1ماہ سے حراست میں رکھاگیاہے، نیب نے خورشیدشاہ کو جوسوال نامہ دیااس کاجواب جمع کرادیا گیاہے ،یہ سب ہی پوچھنااورکرناتھاتوگرفتارکرنے کی کیا ضرورت تھی؟نیب کومزیدریمانڈدینے کی بجائے خورشیدشاہ کاجوڈیشنل ریمانڈدیا جائے۔احتساب عدالت سکھر نے اثاثہ جات کیس میں فریقین کے وکلا کے دلائل سننے کے بعد خورشیدشاہ کے ریمانڈ سے متعلق فیصلہ محفوظ کرلیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں