دنیا کے نمبر ون آل راﺅنڈر شکیب الحسن پر کرپشن ثابت، آئی سی سی نے 2 سال کی پابندی عائد کردی

دبئی (نمائندہ خصوصی) انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی ) نے دنیا کے نمبر ون آل راﺅنڈر شکیب الحسن پر کرپشن الزامات ثابت ہونے پر ہر طرح کی کرکٹ کھیلنے کیلئے 2 سال کی پابندی عائد کردی ہے۔

آئی سی سی کی جانب سے کہا گیا ہے کہ بنگلہ دیش کی ٹیم کے کپتان شکیب الحسن نے آئی سی سی کے اینٹی کرپشن کوڈ کی 3 شقوں کی خلاف ورزی کا اعتراف کیا ہے۔ آئی سی سی نے شکیب الحسن کے ہر طرح کی کرکٹ کھیلنے پر 2 سال کی پابندی عائد کی ہے تاہم اس میں سے ایک سال معطل سزا ہوگی جس کی وجہ ان کا اینٹی کرپشن کوڈ کی خلاف ورزی کا اعتراف کرنا ہے۔ شکیب الحسن 29 اکتوبر 2020 سے دوبارہ کرکٹ کھیل سکیں گے۔

خیال رہے کہ دو سال قبل یہ خبر شائع ہوئی تھی کہ شکیب الحسن کو ایک بین الاقوامی میچ سے قبل بکی کی جانب سے پیشکش ہوئی تھی جس کے بارے میں انہوں نے آئی سی سی کے انسداد کرپشن یونٹ کو آگاہ نہیں کیا تھا جبکہ انہوں نے اینٹی کرپشن اینڈ سیکیورٹی یونٹ (اے سی ایس یو) کے سامنے اس بات کا اعتراف بھی کیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں