کالجز کی طالبات کو بطور کال گرل استعمال کرکے اراکین اسمبلی اور وی آئی پیز کی ویڈیوز بنائے جانے کا انکشاف، گروہ پکڑا گیا

نئی دہلی (ویب ڈیسک) بھارت میں غریب گھرانوں سے تعلق رکھنے والی کالج کی طالبات کو بطور کال گرل استعمال کرکے اراکین اسمبلی، بیوروکریٹس اور وی آئی پیز کی نازیبا ویڈیو بنا کر سرکاری ٹھیکوں اور بھاری بھرکم بھتہ وصول کرنے والا گروہ پکڑا گیا ہے،بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست مدھیہ پردیش میں غریب گھرانوں سے تعلق رکھنے والی کالج کی طالبات کو لگژری لائف اسٹائل کی لت میں مبتلا کرکے جنسی کاروبار کی جانب راغب کرنے والا گروہ پکڑا گیا ہے۔ اس گروہ کی سربراہ شہویتا جین نامی خاتون ہیں جب کہ اس کی ایک ساتھی آرتی بھی ہے جو ایک این جی او چلاتی ہے، گروہ میں 24 طالبات بھی شامل ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں